تیل کی قیمت کم کردی تو بحران قابو میں آئیگا

292
0

تحریر: سید عتیق الرحمن گیلانی

بین الاقوامی منڈی میں 20ڈالر فی بیرل تیل کی قیمت آگئی، یہ سنہرا موقع ہے کہ پاکستان میں کسی بھی چیز پر سبسڈی دینے کے بجائے تیل کو ٹیکس فری کردیا جائے۔ جس سے بجلی ،گیس کے علاوہ آمدورفت اور تمام اشیاء کی قیمتوں میں خاطر خواہ کمی آئے گی۔ پاکستان کا مزدور طبقہ اور فیکٹری ومل مالکان سستے تیل سے قوم وملت ،حکومت وریاست میں نئی روح پھونک دینگے۔
سبسڈی کے نام پرمخصوص سیاسی مقاصد کی خاطر سرمایہ داروںاور جاگیرداروں کو فائدے پہنچائے جاتے ہیں۔ ایک گاڑی میں دو سے تین افراد کیلئے سفر کی گنجائش ہے لیکن مہنگے تیل کی وجہ سے لوگ اس پر عمل نہیں کرسکتے ہیںاسلئے ٹرکوں میں چھپ کر سفر کررہے ہیں، جب تیل کو سستا کیا جائیگا تو قانون کی پاسداری کرتے ہوئے عوام سفر کی سہولت سے فائدہ اٹھا سکیںگے اور کرونا وائرس پھیلنے کے خدشات بھی کم سے کم ہونگے۔ جب تیل سستا ہوگا تو فیکٹری وملوں میں معاوضہ بھی زیادہ دیا جاسکے گا اور جب مزدور طبقہ اپنے پیٹ پالنے سے زیادہ کماسکے گا تو پھر اس میں شعور بھی آئیگا، جب شعور آئیگا تو اپنی جانوں کو بچانے کا سلیقہ بھی آئے گا۔
وزیراعظم عمران خان عقلمند شخص نہیں لیکن جراثیم سے بچنے کیلئے پہلے بھی کسی سے ہاتھ نہیں ملاتا تھا اور جب کسی سے ہاتھ ملانا پڑجاتا تو فوراًہاتھ دھولیتا تھا۔گدھا گاڑی چلانے اور مزدور طبقے کی اکثریت میں عمران خان نیازی سے زیادہ عقل ہے مگر غربت نے ان میں اپنی زندگی بچانے کا احساس کم کردیا ہے۔ جب ملک میں روزگار سے کچھ ملے گا تو ریاست کے سپاہیوں کا بوجھ بھی ریاست کو نہیں اٹھانا پڑیگا۔لوگ محنت مزدوری کرکے اپنے مقدر کوجگانے کی کوشش میں کامیاب ہونگے۔ لندن کاپاکستانی مسلمان مئیر ٹیکسی ڈرائیور کا بیٹا تھا،جس نے گولڈسمتھ کے امیرترین خاندان کو شکست دیدی، حالانکہ عمران خان نے بھی سسرال کا ساتھ دیا تھا۔