عورتوں نے بہادری سے جنونی طبقے کا مقابلہ کیا

557
0

8مارچ 2020ء کو جہاں عورت آزادی مارچ والوں نے پریس کلب سے ڈی چوک تک اسلام آباد میں اپنے حقوق کیلئے احتجاج کرنا تھا وہاں مذہبی طبقات کو بھی حکومت نے ایک کپڑے کی دیوار کے پیچھے بٹھا رکھا تھا۔ عمران خان نیازی نے خود سیاسی علماء کے خوف سے ایک طرف جمعیت علماء اسلام کے دھرنے کو اسلام آباد کے ایک کونے میں روکا تھا اور دوسرے کونے میں اپنی رہائش گاہ کے آگے کنٹینروں سے رکاوٹ کی بھرمار کر رکھی تھی ، واہ نیاز ی واہ۔ عورتوں نے جس بہادری اور خندہ پیشانی کے ساتھ جنونی طبقے کا مقابلہ کیا وہ انسانی تاریخ کے یادگار لمحات ہیں۔ ایک طرف غیظ و غضب سے بھرپور مذہبی لوگوں کا جوش و خروش ہے اور دوسری طرف صنف نازک کی طرف سے اپنے خوف پر قابو رکھ کر وکٹری کا نشان ۔
ہزار خوف ہوں مگر ہو زباں دل کی رفیق یہی رہا ہے ازل سے قلندروں کا طریق