نسل کی بنیاد پر کسی سے تعصب نہیں شکل کالا گورااللہ نے بنایا ہے ، منظور پشتین

154
0

پشتون دہشت گرد نہیں ہیں بلکہ پشتون دہشت گردی کا شکار ہوئے ہیں۔ ہم پر خواہ مخواہ میں دہشت گرد ہونے کا لیبل لگایا گیاہے۔
منظور پشتین وہی مؤقف پیش کررہاہے جو پاکستان کا دنیا کے سامنے ہے کہ پاکستان دہشت گرد نہیں بلکہ دہشت گردی کا شکار ہے

کراچی(پی ٹی ایم جلسہ عام )یہ وضاحت کرتا ہوں کہ ہم نسل پرست نہیں۔ نسل کی بنیاد پر ، شکل کی بنیاد پر، کھانے پینے کی بنیاد پر، پہننے کی بنیاد پر ہم کسی کے ساتھ کوئی تعصب نہیں کرتے ہیں۔ کوئی کالا ہے سفید ہے سرخ ہے اس کو اللہ نے شکل دی ہے کس نسل کا ہے وہ اللہ نے پیدا کیا ہے۔ کون کیا پہنتا ہے کیا نہیں پہنتا، کیا کھاتا ہے کیا نہیں کھاتا وہ ان کی اپنی مرضی لیکن ہمارے وطن کا استحصال کرکے اپنے آپ کو آباد کرو گے تب اس کے خلاف ہم اٹھیں گے۔ نسل نہیں استحصال کی بنیاد پر ہم اپنے وطن کا دفاع کریں گے۔ اپنے وطن کا دفاع کرتے کرتے پشتون تحفظ موومنٹ کے نوجوانوں نے اپنے سر کا نذرانہ پیش کیا۔ اور ارمان لونی جو یہاں کھڑے ہوکر تقریر کرتے تھے انہوں نے قربانی دی۔ خرکمر اوروانہ اور دیگر پشتون شہداء کو ہم اس مجمع کی طرف سے ان کی قربانیوں کو سلام پیش کرتے ہیں۔

پاک فوج، حکومت، اپوزیشن، پی ٹی ایم اورایم کیو ایم،بلوچ اور سب لوگ یہ آیات غور سے پڑھ لیں!

وَمِنَ النَّاسِ مَنْ یُّعْجِبُکَ قَوْلُہ فِی الْحَیَاةِ الدُّنْیَا وَیُشْہِدُ اللّٰہَ عَلٰی مَا فِیْ قَلْبِہ وَہُوَ اَلَدُّ الْخِصَامِ (204) وَاِذَا تَوَلّٰی سَعٰی فِی الْاَرْضِ لِیُفْسِدَ فِیْہَا وَیُہْلِکَ الْحَرْثَ وَالنَّسْلَ وَاللّٰہُ لَا یُحِبُّ الْفَسَادَ (205) وَاِذَا قِیْلَ لَہُ اتَّقِ اللّٰہَ اَخَذَتْہُ الْعِزَّةُ بِالْاِثْمِ فَحَسْبُہ جَہَنَّمُ وَلَبِئْسَ الْمِہَادُ (206) وَمِنَ النَّاسِ مَنْ یَّشْرِیْ نَفْسَہُ ابْتِغَآئَ مَرْضَاتِ اللّٰہِ وَاللّٰہُ رَئُوْف بِالْعِبَادِ (207) یَآ اَیُّہَا الَّذِیْنَ اٰمَنُوا ادْخُلُوْا فِی السِّلْمِ کَآفَّةً وَّلَا تَتَّبِعُوْا خُطُوَاتِ الشَّیْطَانِ اِنَّہ لَکُمْ عَدُوّ مُّبِیْن (208) فَاِنْ زَلَلْتُمْ مِّنْ بَعْدِ مَا جَآئَتْکُمُ الْبَیِّنَاتُ فَاعْلَمُوا اَنَّ اللّٰہَ عَزِیْز حَکِیْم (209) ہَلْ یَنْظُرُوْنَ اِلَّآ اَنْ یَّاْتِیَہُمُ اللّٰہُ فِیْ ظُلَلٍ مِّنَ الْغَمَامِ وَالْمَلَآئِکَةُ وَقُضِیَ الْاَمْرُ وَاِلَی اللّٰہِ تُرْجَعُ الْاُمُوْرُ (210) اور لوگوں میں بعض ایسا بھی ہے جس کی بات دنیا کی زندگی میں آپ کو بھلی معلوم ہوتی ہے اور وہ اپنے دل کی باتوں پر اللہ کو گواہ کرتا ہے، حالانکہ وہ سخت جھگڑالو ہے اور جب پیٹھ پھیر کر جاتا ہے تو ملک میں فساد ڈالتا اور کھیتی اور نسل کو برباد کرنے کی کوشش کرتا ہے، اور اللہ فساد کو پسند نہیں کرتااور جب اسے کہا جاتا ہے کہ اللہ سے ڈر تو اپنی عزت کا مسئلہ سمجھ کر اور بھی گناہ کرتا ہے، سو اس کیلئے دوزخ کافی ہے اور البتہ وہ برا ٹھکانہ ہے اور بعض ایسے بھی ہیں جو اللہ کی رضا جوئی کیلئے اپنی جان بھی بیچ دیتے ہیںاور اللہ اپنے بندوں پر بڑا مہربان ہے۔اے ایمان والو! اسلام میں سارے کے سارے داخل ہو جاؤ، اور شیطان کے قدموں کی پیروی نہ کرو، کیوں کہ وہ تمہارا صریح دشمن ہے۔پھر اگر تم کھلی کھلی نشانیاں آجانے کے بعد بھی پھسل گئے تو جان لو کہ اللہ غالب حکمت والا ہے۔کیا وہ انتظار کرتے ہیں کہ اللہ ان کے سامنے بادلوں کے سایہ میں آ موجود ہو اور فرشتے بھی آجائیں اور کام پورا ہو جائے اور سب باتیں اللہ ہی کے اختیار میں ہیں( سورۂ بقرہ کی ان آیات کی روشنی میں سب اپنے اپنے گریبان میں جھانک لیں)