پاکستان کی بنیاد کو ہلانے والے جنرل ایوب، بھٹو اور مولانا بھاشانی

493
0

پہلے دو چیف انگریز تھے ۔ پہلا مسلمان آرمی چیف جنرل ایوب تھا جس نے طاقت اور دھاندلی سے اقتدار سنبھالا۔
پاکستان کے پہلے جمہوری قائد ذو الفقار علی بھٹو نے جنرل ایوب کیلئے دلالی کی اور مولانا عبد الحمید بھاشانی کو خریدا۔
پاکستان کی نمبر ایک بڑی سیاسی جماعت نیشنل عوامی پارٹی کے مولانا عبد الحمید بھاشانی نے بک کر مادر ملت کو ہروایا
مدیر منتظم نوشتہ دیوار نادر شاہ نے یہ تحقیقی جائزہ پیش کیا جو پاکستان کے مقبول ترین اور جمہوریت پسند عوامی شاعر حبیب جالب نے ’’جالب بیتی‘‘ میں لکھا ہے۔ جنرل ایوب خان آرمی چیف نے اقتدار پر قبضہ کرنے کے بعد اگرچہ اے ڈی اور بی ڈی ممبروں کے ذریعے بنیادی جمہوریت کو متعارف کرایا مگر انکے مقابلے میں مادرِ ملت فاطمہ جناح کھڑی تھیں جو الیکشن جیت گئی تھیں۔ جنرل ایوب کیلئے جو ایک دلال کی حیثیت سے استعمال ہوا تھا اسے ہم قائد عوام ذو الفقار علی بھٹو کی حیثیت سے جانتے ہیں۔ پیسوں پربکنے والی شخصیت مولانا عبد الحمید بھاشانی کی تھی۔ جرنیل خریدتا ہو ، سیاسی لیڈر اسکی دلالی کرتا ہو اور مذہب کا نمائندہ مولانا بکتا ہو تو عوام بیچاری کیا کرسکتی ہے؟۔
پاکستان اسلام کے نام پر بنا تھا اور مولوی خود بھی قرآن سے دور ہے۔ اگر خواتین کے حقوق ، نکاح و طلاق اور حق مہر کے چند مسائل عوام کو اچھی طرح قرآن و سنت سے سمجھائے جائیں تو بکنے ، جھکنے اور دلالی کے سارے معاملات سے حکومت اور عوام کو زبردست چھٹکارا مل جائیگا، ماں بہن اور بیٹی و بیوی کی حق تلفی سے جبری نظام قائم ہے۔