آرمی چیف باجوہ نے امریکی دھمکی کے باوجود ایران کا دورہ کرکے اچھا اقدام اٹھایا. فیروز چھیپا

366
0

harmain-ki-hifazat-ke-lie-saudi-arab-ko-bohran-se-bachana-zaruri-hei-feroz-chhipa

نوشتۂ دیوار کے منتظم فیروز چھیپا نے کہا: کہ سعودی اندورنی انتشار حرمین کیلئے خطرہ ہے، سعودیہ و ایران تصفیہ ضروری جبکہ امریکہ سے امن کو خطرہ ہے۔ ایران اور بھارت کے درمیان گیس پائپ لائن بچھادی، پاکستان کا مسئلہ ایرانی تیل و گیس سے حل کیا تو بھارت و امریکہ گٹھ جوڑ ختم ہوگا، ایران سے اعتماد بحال ہو تو سعودیہ ایران فساد کا راستہ روکنا آسان ہوگا۔ پاکستان قائدانہ صلاحیت کو بروئے کار لائے ۔ گیس پائپ لائن سے کشمیر آزاد ہوگا۔ برصغیر کو گیس مل جائیگی تو درختوں کی کٹائی کا مسئلہ بھی لکڑی جلانے کیلئے نہ رہیگااورآلودگی کا خاتمہ ہوگا۔پُر امن ماحول میں دفاعی بجٹ شہید وں کے بچوں کی اعلیٰ تعلیم کے کام آئیگا تو باصلاحیت قیادت ملک وقوم کیلئے غریبوں کا مقدر بنے گی۔ فوجی وسول افسر اور سیاستدان کا نسل در نسل اقتدار پر قبضہ بڑا مسئلہ ہے۔ اگروہ صلاحیت رکھتے تو پاکستان بد سے بدتر حالت پرنہ پہنچتا،کیا سول وملٹری بیوروکریسی اور موروثی سیاستدان قوم کو انگریز نے حق مہر یا جہیز میں دئیے؟ عوام پر یہ بوجھ ہے! ۔ ٹیکس پر ٹیکس، قرضہ پر قرضہ لیکر بیرون ملک سرمایہ منتقل اور قوم کا سبھی نے بیڑہ غرق کیا۔ جاہل بھوکی عوام کھڑی ہوئی تویہ چھوٹا طبقہ قلعوں اور محلات میں سخت انتقام کا نشانہ بن جائیگا۔ 70سال سے کشمیر آزاد نہ ہوابلکہ ملک دولخت ہوگیا، قرض کی سودی ادائیگی نے دیوالیہ بنادیا مگر حکمران ٹیٹیں مار ے کہ ہم نہ ہوتے تو عوام کی زندگی اجیرن بنتی، سعودیہ میں جاہل مذہبی طبقہ نے معاشرتی خرابیاں جنم دیں۔ مسیار سے علاج نہ ہوا، تو مغرب کی آزادی سے معاشرتی برائیاں ختم کرنیکا فیصلہ ہوا۔ ہمارا یہ اخبار امن کی وہ چڑیا ہے جو نمرود کی آگ میں چونچ سے پانی ڈال رہا تھا اور پھونک مار کر آگ کے الاؤ کو تیز کرنے کی خواہش رکھنے والی چپکلی سے ہماراجذبہ یکسر مختلف ہے ۔