اسلام زیادہ پھیلنے والا مذہب تھا کفر نے فرقہ واریت کی آگ بھڑکائی جس سے قتل و غارت ہوئی. علامہ عباس کمیلی

396
0

islam-allama-abbas-kumaili-syed atiq ur rehman gilani-tableegh-shia-sunni-ittehad-bain-ul-muslimeen

کراچی (ڈاکٹر احمد جمال) علامہ عباس کمیلی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ گذشتہ عرصہ میں اسلام دنیا میں سب سے زیادہ پھیلنے والا مذہب تھا اسی سے بوکھلا کر دنیائے کفر نے سازش کی اور مسلمانوں میں فرقہ واریت کی آگ بھڑکائی۔ کفر اور قتل و غارت گری کے فتوے دئیے گئے جو قرآن و سنت کے سراسر خلاف تھے نتیجے میں بعض اسلامی ممالک اور بالخصوص پاکستان میں خون کے دریا بہے ہزاروں مسلمان مسلمانوں کے ہاتھوں ہی قتل ہوئے اور شدت پسندی اور انتہا پسندی ہر طرف پھیل گئی۔ اس سے اسلام کو شدید نقصان پہنچا اس صورتحال کو بھانپتے ہوئے چند درد دل رکھنے والے فرقہ واریت کی اس آگ کو بجھانے میں پیش پیش رہے۔ جس میں سید عتیق الرحمن گیلانی صاحب صف اول میں ہیں۔ بہر حال خوش آئند بات یہ ہے کہ حکومت کی کوششوں سے تمام مکاتب فکر نے شدت پسندی اور قتل و غارت گری کے خلاف متفقہ فتویٰ جاری کیا ہے جس کے خوشگوار اثرات ہورہے ہیں۔ بڑی حد تک قتل و غارت گری رک گئی ہے۔ اب متفقہ فتوے کی زیادہ سے زیادہ تشہیر اور تبلیغ کی ضرورت ہے تاکہ دہشتگردی کا مستقل انسداد ہو سکے اور پاکستان امن کا گہوارہ بن جائے۔