جامعہ مدنیہ لاہور کے مولانا رشید میاں سے ملاقات

645
0

لاہور( ذکاء اللہ) جامعہ مدنیہ کریم پارک لاہور میں ہم وفد کی شکل میں گئے ۔ مولانا رشید میاں نے کہا کہ ’’پہلے خانوں اور نوابوں کو بھی دین سے دلچسپی تھی ،اسلئے مدارس سے بھی صلاحیت والے علماء ومفتیان نکلتے تھے مگر اب معاشرے کا بالکل کچرا مدارس میں آتا ہے اور صلاحیت والے لوگوں کو سکول کالج میں پڑھایا جاتاہے تو مدارس سے کیا اُمید وابستہ ہوسکتی ہے۔عتیق گیلانی نے جب طلاق اور قرآن کی تعریف کے حوالہ سے مدارس کے نصاب کی نشاندہی کی تو انہوں نے کہا کہ اس سے کچھ حاصل نہیں ہوگا بس جو بزرگوں نے کیا ہے اسی پر چلنا ہوگاپہلی بار میں یہ باتیں سن رہا ہوں، دیکھوں گا کہ علماء نے اس پر کیا لکھ دیا ہے۔ از ذکاء اللہ