ثانیہ خاصخیلی شہید کو خراج عقیدت پیش کیا جائے. اجمل ملک

478
0

sania-khaskheli-shaheed-ko-khiraj-e-aqeedat-pesh-kiya-jaye

ماہنامہ نوشتۂ دیوار کے ایڈیٹر اجمل ملک نے کہا کہ ثانیہ خاصخیلی شہید نے عزت کیلئے جو عظیم الشان قربانی دی ، اسکاخاندان دربدر ہے ۔ اور المیہ ہے کہ دخترسندھ، بنت اسلام، شہزادئ پاکستان اور صاحبزادئ انسانیت نے اتنی بڑی قربانی دی لیکن ہمارے معاشرے کی سیاست، ہمارے مذہبی لوگ، ہماری حکومت اور ہماری تہذیب وتمدن کا خمیر اسقدربے حس ہوچکے ہیں کہ غریب خاندان کی تعزیت کیلئے بھی علاقے لوگ جانے سے ڈرتے تھے۔

sania-khaskheli-shaheed-ko-khiraj-e-aqeedat-pesh-kiya-jaye-nawithta-e-diwar
ریاست و حکومت کچھ معاشرتی اور مذہبی برائیوں سے نہیں نمٹ سکتی ہے۔ ایک مفتی کی طرف سے جب ناجائز حلالہ کا فتویٰ دیا جاتا ہے تو خاتون ، اسکے شوہر اور دونوں خاندان کی عزتیں ملیامیٹ ہوجاتی ہیں۔ زمین بھی لرزتی ہے اور آسمان بھی عرش تک لرز جاتا ہے۔ دنیا دیکھتی ہے کہ مسلمان بے غیرتی کے اس فعل کو اپنی مرضی سے قرآن و سنت کی تعلیمات سمجھ کر عمل کررہے ہیں تو لوگ اسلام کی طرف نہیں آتے۔ دوسری طرف لڑکی پسند ہو اور وہ شادی نہ کرنا چاہے ، یا منگیتر مکر جائے تو اس پر تیزاب پھینکنے اور قتل کرنے کی حد تک گزر جاتے ہیں، اللہ نے طلاق کا مسئلہ بیان کرنے سے پہلے یہ وضاحت کی کہ اللہ کو مصالحت نہ کرنے کیلئے تم ڈھال کے طور پر استعمال مت کرو۔ پھر عدت میں رجوع اور عدت کی تکمیل پر معروف رجوع کی اجازت بھی واضح کردی۔ اور ساتھ میں یہ بھی واضح کردیا کہ اگر عدت میں تیسری مرتبہ بھی علیحدگی کا فیصلہ برقرار رہا تو بیوی سے کوئی چیز واپس لینا جائز نہیں مگر یہ کہ دونوں کو خوف ہو اور فیصلہ کرنیوالے بھی یہی سمجھیں تو پھر کوئی حرج نہیں اور اس صورت کے بعد طلاق دی تو شوہر کیلئے حلال نہیں یہانتک کہ وہ کسی اور سے نکاح کرلے۔ قرآن نے جس معاشرتی برائی کو ختم کرنے کا قدم اٹھایا تھا وہ تو ہم سے نہیں ہوسکا الٹا یہ بھی ہورہا ہے کہ جبری زیادتیاں اور جبری شادیاں ماحول کا حصہ ہیں اور مزاحمت کرنیوالی کا یہ حشر ہوتا ہے جو ثانیہ شہید کا ہوا اور بینش شریف پر جو تیزاب پھینکا گیا۔ علماء کو کردار ادا کرنا ہوگا ورنہ بڑا عذاب آسکتا ہے۔