امریکہ نے فیصلہ کیا کہ پاکستان کو کسی طرح بھی نہیں چھوڑ سکتے۔ ایٹمی پاور ہے، چین سے قریبی تعلق ہے اس کی فوج پریشان کرسکتی ہے۔ اس کو ترقی اور مسلم ممالک کی قیادت نہیں کرنے دینی! - ضربِ حق

پوسٹ تلاش کریں

امریکہ نے فیصلہ کیا کہ پاکستان کو کسی طرح بھی نہیں چھوڑ سکتے۔ ایٹمی پاور ہے، چین سے قریبی تعلق ہے اس کی فوج پریشان کرسکتی ہے۔ اس کو ترقی اور مسلم ممالک کی قیادت نہیں کرنے دینی!

امریکہ نے فیصلہ کیا کہ پاکستان کو کسی طرح بھی نہیں چھوڑ سکتے۔ ایٹمی پاور ہے، چین سے قریبی تعلق ہے اس کی فوج پریشان کرسکتی ہے۔ اس کو ترقی اور مسلم ممالک کی قیادت نہیں کرنے دینی! اخبار: نوشتہ دیوار

امریکہ نے فیصلہ کیا کہ پاکستان کو کسی طرح بھی نہیں چھوڑ سکتے۔ ایٹمی پاور ہے، چین سے قریبی تعلق ہے اس کی فوج پریشان کرسکتی ہے۔ اس کو ترقی اور مسلم ممالک کی قیادت نہیں کرنے دینی!

امریکی مصنف نے پاکستان کو تباہ وبرباد رکھنے کی وجوہات بیان کی ہیں۔معاشی وسیاسی عدم استحکام کیساتھ ساتھ پاک فوج کو بھی دنیا اور اپنی عوام کی نظروں سے گرانے کی منصوبہ بندی ہوئی تھی

پاک فوج ایسی کمزور منّی نہیں ہے جس کو دوسرے بدنام کرسکیں مگر اپنے کردار کی بدولت اس کو بدنام کیا گیا۔ امریکہ شمالی اتحاد کے علاقہ میں اپنے اڈے بناسکتا تھا مگر پاکستان کو بدنام کرنا تھا!

امریکی مصنف ڈینیل مارکی اپنی کتاب نو ایگزٹ فرام پاکستان میں لکھتے ہیں کہ ہم امریکن پاکستان کو نہیں چھوڑ سکتے اس کی تین بڑی وجوہات ہیں پہلی وجہ پاکستان کا نیوکلیئر میزائل پروگرام اتنا بڑا اور ایکس ٹینسو ہے کہ اس پر نظر رکھنے کے لیے ہمیں مسلسل پاکستان کے ساتھ انگیج رہنا پڑے گا۔ دوسری وجہ پاکستان دنیا کا وہ واحد ملک ہے جس کے چین کی سول وملٹری قیادت کے ساتھ گہرے تعلقات ہیں چین پر بھی نظر رکھنے کیلئے پاکستان کے ساتھ انگیج رہنا ضروری ہے۔ تیسری وجہ یہ ہے کہ پاکستان کے پاس اتنی بڑی فوج ہے کہ نہ صرف ریجن کو بلکہ پوری دنیا کو ڈی سٹیبلائز کر سکتی ہے۔ پاک فوج پر نظر رکھنے کے لیے بھی پاکستان کے ساتھ انگیج رہنا ضروری ہے وہ مزید لکھتا ہے کہ ہم نے72سال پہلے فیصلہ کیا تھا کہ پاکستان کو ڈیویلپ ہونے کی اجازت نہیں دی جا سکتی اور پاکستان کو اسلامک دنیا کو بھی لیڈ کرنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ اس کیلئے ہم نے کچھ طریقے اپنائے ہیں وہ یہ کہتے ہیں کہ پاکستان کو اتنا ڈی سٹیبلائز کرو کہ ہم اسے مینج کر سکیں جس طرح اس وقت وہ وہاں پہ بیٹھ کے مبینہ طور پر پاکستان کو مینج کر رہے ہیں اور ڈی سٹیبلائز اس طرح کرتے ہیں کہ ہم پاکستانی لیڈرز کو خرید لیتے ہیں جن میں پولیٹیکل لیڈرز سول بیوروکریسی کے لیڈرز اور افسران اور اس کے علاوہ جرنلسٹ بھی شامل ہیں اور میڈیا ہاؤسز بھی اس میں شامل ہیں ڈینیل مارکی اپنی کتاب میں لکھتا ہے کہ پاکستان کے لیڈرز اپنے آپ کو بہت تھوڑی قیمت میں بیچ دیتے ہیں اتنی تھوڑی قیمت کہ انہیں امریکہ جانے کا ویزہ مل جائے یا امریکہ میں ان کے بچوں کو سکالرشپ مل جائے اور اتنی چھوٹی چیز پر وہ پاکستان کے مفادات بیچنے پر تیار ہو جاتے ہیں دوستو یہ تھے کچھ پوائنٹ ڈینیل مارکی کی کتاب ”نو ایگزیکٹ فرام پاکستان” کے کچھ پوائنٹس جس سے آپ کو پتہ چلا کہ امریکہ مبینہ طور پر پاکستان کو کن تین وجوہات کی بنا پر نہیں چھوڑ سکتا ۔

اخبار نوشتہ دیوار کراچی، شمارہ اپریل2024
www.zarbehaq.com
www.zarbehaq.tv
Youtube Channel: Zarbehaq tv

اس پوسٹ کو شئیر کریں.

لوگوں کی راۓ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

اسی بارے میں

سیدمحمدامیر شاہ اورسیداحمد شاہ نمایاںکرادر۔ سید سبحان شاہ اورسیداکبرشاہ نمایاں کردار
لیلة القدر کی رات برصغیر پاک و ہند انگریز کے تسلط سے آزاد ہوگئے اور یہ بہت بڑا راز تھا
جابر بادشاہ کے سامنے کلمہ حق کہنا، سواد اعظم کا اتباع اور امت کا گمراہی پر اکھٹے نہ ہونے کی خوشخبری