پوسٹ تلاش کریں

وزیر اعظم قوم کا باپ ہوتا ہے۔ عمران خان

وزیر اعظم قوم کا باپ ہوتا ہے۔ عمران خان اخبار: نوشتہ دیوار

وزیر اعظم قوم کا باپ ہوتا ہے۔ عمران خان

تحریر: سید عتیق الرحمن گیلانی

کیا عمران خان نے خودبھی کسی وزیراعظم کو اپنے باپ کا درجہ کبھی دیا ہے؟

دو انتہاؤں کے بیچ میںکھڑے عمران خان کو ایک طبقہ عالم اسلام کا واحد ہیرو اور دوسرا طبقہ یہودی ایجنٹ سمجھتا ہے

سوشل اور الیکٹرانک میڈیا میں سرگرم کرائے کے صحافیوں کیلئے واشروم کے ٹب میں چھپ کر ڈوب مرنے کا مقام ہے کہ پاک فوج میں تعینات افسروں کی نوکری ، عزت اور زندگی کو خوامخواہ امتحان میں ڈال رہے ہیں۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی جب مدتِ ملازمت ختم ہورہی تھی تو آئین میں توسیع کی کوئی گنجائش نہیں تھی۔ تحریک انصاف کے عمران خان، مسلم لیگ ن کے نوازشریف اور پیپلزپارٹی کے آصف علی زرداری کے علاوہ ڈھیر سارے سیاسی قائدین اور رہنماؤں نے آئین میں تبدیلی کرکے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کو یہ توسیع کیوں دی تھی؟۔ آرمی چیف کی قیادت میں جنرل فیض حمیدDGISIنے فیض آباد دھرنے کا اہتمام کیا تھا؟۔ کھل کر سیاسی مداخلت کی تھی ؟ اور نوازشریف کے کیسوں کو عدالت میں مداخلت کرکے سزا دلوائی تھی؟۔ عمران خان کو ملک وقوم پر مسلط کیا تھا؟۔ پاکستان کو سیاست اور اخلاقیات کے بدترین ادوار میں لاکھڑا کیا تھا؟۔ اس نالائق آرمی چیف کے دور میں تحریک لبیک،PTM، بلوچ دہشتگرد اور پتہ نہیں کیا کیا ہوا تھا ، جسٹس شوکت عزیز، جسٹس ملک، جسٹس فائز عیسیٰ اور بہت سارے معاملات میں فوج نے مداخلت کرکے ن لیگ کیساتھ برا کیا تھا؟۔ نوازشریف کو دباؤ ڈال کر باہر بھجوادیا تھااور عمران خان کے مشن کہ میںNROنہیں دوں گا، پر بھی پانی پھیر دیا تھا۔ امریکہ کو اڈے دینے سے انکار پر قوم کے سیاسی بھگوان عمران خان کو بہت پہلے سے پتہ چل چکا تھا کہ امریکہ کا یہ غلام اب امریکہ کے حکم پر الشیطان الرجیم چینج کرے گا۔ ایسے میں ہزاروں لعنتیں ایسی کہ ہر لعنت پر دَم نکلے کے مستحق آرمی چیف کو عمران خان نے برطرف کیوں نہیں کیا تھا؟۔ نوازشریف نے لندن میں بیٹھ کر توسیع دینے کی حمایت کیوں کی تھی؟۔
مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف کی وکالت کرنے والے بے شرم صحافیوں میں تھوڑی سی بھی حیاء ، غیرت، ضمیر ، اخلاقی قدر اور عزت ہوتی تو ان جماعتوں کی وکالت کبھی نہ کرتے۔ جب آرمی چیف کی مدت ملازمت ختم ہورہی تھی تو یہ لوگ اپنی دُم اٹھاکر توسیع کررہے تھے اور جب مدت ملازمت باقی ہے تو اس پر تنقید کے نشتر برسارہے ہیں۔ عمران خان نے کبھی اپوزیشن کو اپنا نہیں سمجھا لیکن جب رخصت ہوگئے تو وزیراعظم کو قوم کا باپ قرار دیدیا۔ پہلے یا بعد والوں کواپنا باپ یا اپوزیشن کو بچہ سمجھا ہو تو کوئی بات ہوتی۔سیتاوائٹ، جمائما، ریحام خان اور بشریٰ بی بی کیطرح اولاد بنناپی ٹی آئی کے کارکنوں کیلئے بھی قابل قبول نہ ہوگا۔

www.zarbehaq.com
www.zarbehaq.tv
https://www.youtube.com/c/Zarbehaqtv

اس پوسٹ کو شئیر کریں.

لوگوں کی راۓ

  • M. Feroze Chhipa

    Excellent News Paper

  • Bilal

    اس کتاب سے بہت سے لوگوں کے گھر جڑیں گے

  • Mustafa

    میں آپ کی رائے سے متفق ہوں۔

  • Mustafa

    بہت اچھا آرٹیکل ہے، حکومت، عدلیہ او ر ریاست کو اس پر توجہ دینی چاہئے۔

  • شباب اکرام

    حقیقت یہی ہے کہ اغیار ہمیشہ امت مسلمہ سے ہی گبھراتی ہے۔۔۔تب ہی تو سب سے امت کا مرتبہ چھین کر صرف اور صرف عوام کے درجے تک گرا دیا۔۔۔ طویل مباحثہ وقت پانے پر پیش کرونگا مگر اس بے بس عوام کیلئے صرف ایک شعر آپکی خدمت میں ان کی فطری عکاسی کیلئے عرض کونگا۔۔ خدا کو بھول گئے لوگ فکرےروزی میں غالب۔۔ تلاش رزق کی ہے رازق کا خیال تک نہیں۔۔۔۔ بہت شکریہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

اسی بارے میں

مجھے یہ نہیں معلوم تھا کہ ریاست چھچھوری بھی ہوتی ہے۔ وسعت اللہ خان
سیاسی جماعتیں اپنی غلطیوں پر کم از کم معافی تومانگ لیں۔ سہیل وڑائچ
ایسٹ انڈیا کمپنی سے آج تک سلیکٹڈ و سلیکٹر کی سیاست۔ رضاربانی