پوسٹ تلاش کریں

عورت مارچ 2020 پر مولوی طبقے نے ہلا بول دیا

عورت مارچ 2020 پر مولوی طبقے نے ہلا بول دیا اخبار: نوشتہ دیوار

عورت مارچ2020پر مولوی طبقے نے ہلا بول دیا

اسلام آباد میں عورت مارچ والوں اور ان کی مخالفت میں مذہبی جوشیلے طبقے کو جس طرح ایک ٹینٹ کے کپڑے کی آڑ میں قریب قریب رکھا گیا تھا اور جوش وجذبات سے بھرپور مذہبی طبقے کے جلسہئ گاہ کے پاس ہی روڈ کے دوسرے سائیڈسے عورت مارچ والوں نے گزرنا تھا۔ پولیس کو چھوٹی چھوٹی سٹک دی گئی تھیں جو کسی تصادم سے بچانے کیلئے کافی نہیں تھیں۔ عورت مارچ کی خواتین نے بہت بہادری کیساتھ وہاں سے گزرنے کی جرأت کرلی۔ اگر بڑے بڑے پھنے خان جرنیل بھی ہوتے تو کنٹینروں کی آڑ میں بھی اس طرح غیرمسلح ہوکر گزرنے کی جرأت مشکل سے کرتے۔ دہشت گردی کی فضاء کا خوف توڑنے میں عورت مارچ نے اپنے اس اقدام سے بہت بڑا کارنانہ انجام دیا تھا۔ ایک مولوی نے ایف آئی آر درج کروائی تھی کہ عورت مارچ والوں نے اس کو اینٹ ماری ہے۔ مذہبی طبقے کی پھینکی ہوئی چیزوں کو خواتین مارچ کے جلوس پر مأمور مردوں نے واپس پھینکا تھا اور اس سے زخمی ہونے والے مولوی کو شرم کھاکر ایف آئی آر درج نہیں کروانی چاہیے تھی۔
بلوچ سٹودنٹ کی طرف سے احتجاجی کیمپ لگانے پرسخت لاٹھی چارج کا احوال ایمان مزاری نے حال ہی میں ڈان نیوز کے پروگرام میں سنایا۔ اگر حکومت پابندی لگاتی تو عورت مارچ اور اس کے مخالفین پروگرام نہیں کرسکتے تھے لیکن ایک طرف حکومت نے بین الاقوامی میڈیا کے خوف سے عورت آزادی مارچ والوں کو بددلی سے اجازت دی تھی اور دوسری طرف مذہبی شدت پسند طبقے کو بھی کھڑا کردیا تھا۔ مذہبی امور کے وزیر مولانا نور الحق قادری نے وزیراعظم عمران خان کو خط لکھ دیا ہے اور ہوسکتا ہے کہ خاتون اول بشریٰ بی بی کیخلاف ویلاگ کرنے والی ہدیٰ بھرگڑی اور اس کی ساتھی عورتوں پر پابندی بھی لگ جائے۔ میڈیا پر بھی مراد سعید کی وجہ سے پابندیاں لگائی گئی ہیں۔ اگرعورت کے اسلامی حقوق کا معاملہ اجاگر کیا جائے توپھرتصادم سے نکلا جاسکتا ہے۔

www.zarbehaq.com
www.zarbehaq.tv
https://www.youtube.com/c/Zarbehaqtv

اس پوسٹ کو شئیر کریں.

لوگوں کی راۓ

  • M. Feroze Chhipa

    Excellent News Paper

  • Bilal

    اس کتاب سے بہت سے لوگوں کے گھر جڑیں گے

  • Mustafa

    میں آپ کی رائے سے متفق ہوں۔

  • Mustafa

    بہت اچھا آرٹیکل ہے، حکومت، عدلیہ او ر ریاست کو اس پر توجہ دینی چاہئے۔

  • شباب اکرام

    حقیقت یہی ہے کہ اغیار ہمیشہ امت مسلمہ سے ہی گبھراتی ہے۔۔۔تب ہی تو سب سے امت کا مرتبہ چھین کر صرف اور صرف عوام کے درجے تک گرا دیا۔۔۔ طویل مباحثہ وقت پانے پر پیش کرونگا مگر اس بے بس عوام کیلئے صرف ایک شعر آپکی خدمت میں ان کی فطری عکاسی کیلئے عرض کونگا۔۔ خدا کو بھول گئے لوگ فکرےروزی میں غالب۔۔ تلاش رزق کی ہے رازق کا خیال تک نہیں۔۔۔۔ بہت شکریہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

اسی بارے میں

رسول اللہ ۖ ، صحابہ ، امام ابوحنیفہ ، شاہ ولی اللہ اور دار العلوم دیوبند کے سپوت کپوت تک کا سلسلہ
مذہبی جماعتوں نے کبھی پاکستان میں ایک مرتبہ بھی قرآن وسنت کے مطابق قانون سازی نہیں کی!
آواز آئی کہ تمہاری طلاق نہیں ہوئی ،قرآن کھول کردیکھ لو!