پوسٹ تلاش کریں

بھارتی مسلم لڑکی کا تین طلاق اور حلالہ کے خلاف زبردست غصہ کا اظہار

بھارتی مسلم لڑکی کا تین طلاق اور حلالہ کے خلاف زبردست غصہ کا اظہار اخبار: نوشتہ دیوار

اس کی ویڈیو نیٹ پر دستیاب ہے اور مسلمانوں کیلئے بہت شرم کا مقام ہے جب اللہ تعالیٰ نے قرآن کریم میں تین طہروں میں تین مرتبہ طلاق دینے کے بعد رجوع کا حکم واضح کیا ہے تو مسلمانوں کو کیوں ایسی بے غیرتی پر مجبور کیا جاتا ہے؟۔ حلالہ کے رسیا علماء و مفتیان پتہ نہیں کس قماش کے ہوتے ہیں کہ ان کو قرآن و سنت کی واضح تعلیمات کے بعد بھی رجوع کا مسئلہ سمجھ میں نہیں آتا۔حکومت کو چاہیے کہ ان پردہ نشینوں کے نقاب کھینچ کر ٹی وی پر میرے سامنے مناظرے کیلئے پیش کریں۔ عتیق

اس پوسٹ کو شئیر کریں.

لوگوں کی راۓ

  • M. Feroze Chhipa

    Excellent News Paper

  • Bilal

    اس کتاب سے بہت سے لوگوں کے گھر جڑیں گے

  • Mustafa

    میں آپ کی رائے سے متفق ہوں۔

  • Mustafa

    بہت اچھا آرٹیکل ہے، حکومت، عدلیہ او ر ریاست کو اس پر توجہ دینی چاہئے۔

  • شباب اکرام

    حقیقت یہی ہے کہ اغیار ہمیشہ امت مسلمہ سے ہی گبھراتی ہے۔۔۔تب ہی تو سب سے امت کا مرتبہ چھین کر صرف اور صرف عوام کے درجے تک گرا دیا۔۔۔ طویل مباحثہ وقت پانے پر پیش کرونگا مگر اس بے بس عوام کیلئے صرف ایک شعر آپکی خدمت میں ان کی فطری عکاسی کیلئے عرض کونگا۔۔ خدا کو بھول گئے لوگ فکرےروزی میں غالب۔۔ تلاش رزق کی ہے رازق کا خیال تک نہیں۔۔۔۔ بہت شکریہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

اسی بارے میں

تبلیغی جماعت کہتی ہے کہ لاالہ الا اللہ کا مفہوم یہ ہے کہ اللہ کے حکموں میں کامیابی کا یقین مگر حلالہ کی کیاکامیابی ہے؟
خلع میں عدالت و مذہبی طبقے کا قرآن وسنت سے انحراف؟
بشریٰ بی بی قرآن وسنت کی دوعدتیں گزار چکی تھیں