پوسٹ تلاش کریں

کیسے شوہر کی بیوی ماں اور بھابھی بنوں؟ حلالہ کے نام پر میرا مذاق ہے. شبینہ انڈیا

کیسے شوہر کی بیوی ماں اور بھابھی بنوں؟ حلالہ کے نام پر میرا مذاق ہے. شبینہ انڈیا اخبار: نوشتہ دیوار

بھارتی میڈیا پر اس خاتون نے بتایا ہے، ویڈیو دیکھ لی جائے کہ اس کی 2009ء میں شادی ہوئی، 2011ء کو ایک ساتھ تین طلاق دی گئی اور پھر سسر شوہر کے باپ نے حلالہ کیا۔شوہر سے دوبارہ نکاح ہوا، 2017ء میں پھر طلاق ہوئی ۔اب کہتے ہیں کہ بھائی سے حلالہ کرو۔ ایک خاتون کس طرح اپنے شوہر کی کبھی ماں، کبھی بیوی اور کبھی بھابی بن سکتی ہے، حلالہ عورت کیساتھ زیادتی ہے، اس کو ختم ہونا چاہیے۔ قارئین یہ یاد رکھیں کہ سماء ٹی وی پر بھی سید قطب کے پروگرام میں مولانا جمیل آزاد نے کہاتھا کہ مجبوری میں سسر سے شادی ہوسکتی ہے اور یہ پروگرام رمضان کے افطار سے پہلے ہوا، پھر نشر بھی ہوتا رہا۔ اس بے غیرتی کا دھندہ جاری رہا تو علماء کا حال کیا ہوگا؟۔ ہم نے بار ہاواضح کیامگر علماء ٹس سے مس نہیں ہورہے ہیں ،کتنی بے حسی ہے؟۔

اس پوسٹ کو شئیر کریں.

لوگوں کی راۓ

  • M. Feroze Chhipa

    Excellent News Paper

  • Bilal

    اس کتاب سے بہت سے لوگوں کے گھر جڑیں گے

  • Mustafa

    میں آپ کی رائے سے متفق ہوں۔

  • Mustafa

    بہت اچھا آرٹیکل ہے، حکومت، عدلیہ او ر ریاست کو اس پر توجہ دینی چاہئے۔

  • شباب اکرام

    حقیقت یہی ہے کہ اغیار ہمیشہ امت مسلمہ سے ہی گبھراتی ہے۔۔۔تب ہی تو سب سے امت کا مرتبہ چھین کر صرف اور صرف عوام کے درجے تک گرا دیا۔۔۔ طویل مباحثہ وقت پانے پر پیش کرونگا مگر اس بے بس عوام کیلئے صرف ایک شعر آپکی خدمت میں ان کی فطری عکاسی کیلئے عرض کونگا۔۔ خدا کو بھول گئے لوگ فکرےروزی میں غالب۔۔ تلاش رزق کی ہے رازق کا خیال تک نہیں۔۔۔۔ بہت شکریہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

اسی بارے میں

تبلیغی جماعت کہتی ہے کہ لاالہ الا اللہ کا مفہوم یہ ہے کہ اللہ کے حکموں میں کامیابی کا یقین مگر حلالہ کی کیاکامیابی ہے؟
خلع میں عدالت و مذہبی طبقے کا قرآن وسنت سے انحراف؟
بشریٰ بی بی قرآن وسنت کی دوعدتیں گزار چکی تھیں