12 سال سے حلالہ کی لعنت کو قوم نہیں سمجھ رہی تو ملٹری کا کیا قصور ہے؟ سید عتیق الرحمن گیلانی

شبیزمائی خان (چاند خان) کے بیان پر تبصرہ
نفرتوں کی بنیاد پر جنم لینے والی تحریکیں جھاگ کی طرح اٹھ کر بیٹھ جاتی ہیں ، اپنی قوم سے محبت ایمان مگر تعصبات کفر ہیں ۔ اداریہ صفحہ نمبر2ضرور پڑھئے
پاکستان سے پہلے انگریز کے دور میں اور انگریز کے دور سے پہلے مسلم دنیا کی حالت بہتر کیوں نہیں تھی؟ ۔ نیٹو نے افغانستان میں امن قائم نہیں کیا لیکن پاکستان میں امن ہے!
منظورپشتین نے اچھے موقع پر واضح کیا کہ ’’ افغانستان سے الحاق کے نعروں سے PTMکا تعلق نہیں، ہمارا یہ نعرہ ہے کہ ہمارے جوان قتل اور گھر برباد ہورہے ہیں‘‘اور بس!
فیس بک پر چاندمیاں کی گہری فکر و نظر، سنجیدگی ایمانداری سے فرض پورا کرنا اچھی بات ہے۔ کھلے دل و دماغ سے خیر مقدم کرنا چاہیے۔ علماء و فوج کے اعلیٰ افسران اس لمبی چوڑی ویڈیو کو ضرور سنیں، یہ فرد نہیں زمانے کے تاثرات ہیں۔ معروضی حقائق سے منہ نہیں موڑا جاسکتا ہے۔ ایک ایک بات کا تفصیل سے جواب دینا ہوگا۔ حضرت عثمانؓ شہید کئے گئے تو مُلا ملٹری کاتصور نہ تھا۔ عشرہ مبشرہ کے صحابہؓ کی جنگوں میں حضرت علیؓ و عمارؓاور حضرت طلحہؓ و زبیرؓ اور حضرت عائشہؓ نے لڑائی لڑی اور ہزاروں افراد اس کی نذر ہوگئے۔ حالانکہ نبی ﷺ نے فرمایا کہ ’’خبردار ! میرے بعد کافر نہ بن جانا کہ ایکدوسرے کی گردنیں مارنے لگو‘‘۔ جب 9/11کے بعد امریکہ نے افغانستان پر جنگ مسلط کی تو پاکستان کا بچہ بچہ امریکہ کیخلاف تھا۔ امریکہ نے عراق و لیبیا کو بھی تباہ کیا جو خوشحال ممالک تھے، جہاں ملٹری اور علماء کا وہ تصور نہ تھا جو شپیزمئی کے دل و دماغ پر چھایا ہوا ہے۔ وزیرستان میں وزیر اور محسودنے جنگیں لڑیں اور محسودومحسود اور محسود و بیٹنی ، محسود اور برکی قبائل نے بھی جنگیں لڑی ہیں۔
امریکہ نے روس کیخلاف مجاہدین کو تیار کیا پھر افغانستان ، عراق اور لیبیا کو تباہ کیا، اسکے پیچھے آرمی یا علماء کا فتویٰ نہیں تھا ؟۔ معراج محمد خان جیسے باشعور، ملٹری مخالف سیاسی قائد امریکہ کیخلاف طالبان کو داد دے رہا تھا تو آرمی طالبان سے کس طرح وہ نفرت کرتی جو بہت بعد میں سبھی کے دل و دماغ پرچھاگئی؟۔ طالبان ختم اسلئے نہیں کیے گئے کہ پختونوں کو موت کے گھاٹ اتارنا پڑتا۔ اس ناگہانی حادثے نے فوجی جوانوں کو بڑی تعداد میں بھیڑ بکریوں کی طرح ذبح ہونے پر مجبور کیا۔گاؤں ملازئی ٹانک ، ڈیرہ اسماعیل خان کے قلعے میں راتوں رات 40سیکورٹی اہلکاروں کے گلے کاٹے گئے۔ بڑی تعداد فوجی جوان و آفیسرز کی جانوں سے گئی۔ خون کی ہولی کھیلی جارہی تھی تو پختون طالبان تھے۔ اسکے پیچھے ملٹری تھی اور نہ علماء کرام تھے۔
امیر امان اللہ خان جدید تعلیم یافتہ تھے۔ پختون خواتین کی سوات میں منڈی لگتی ۔ گائے ، بھینس، بھیڑ، بکری کی طرح بیچنے کیلئے ملٹری سازش یا مُلا نے فتویٰ دیا؟۔ کانیگرم میں بھی دوخواتین کاتعلق سوات سے تھا۔پیر زبیراحمدشاہ امریکی صحافی بھی اسکا پوتا ہے۔ ملٹری یا مفتی مجبور کرتے ہیں کہ بہنوں، بیٹیوں کو حق مہر سے محروم کرکے فروخت کرو؟۔ کمالیہ پنجاب میں آج بھی لڑکیوں کی قیمت بھینسوں سے کم رپورٹ کی گئی ، ARYنیوز کی سرعام میں دیکھ سکتے ہیں۔ سب سے آسان کام کسی کو موردِ الزام ٹھہرانا ہے ۔ تعصبات اُبھارنے سے ہدف آسانی سے مل سکتاہے۔شپیزمئی نے نسلی تعصبات کی نفی کی جویہ بڑااچھاتھا، اسلام نے غلام اور لونڈی کی اولاد کا فرق بھی مٹادیا تھا۔ عزت وذلت کی بنیاد کردار نہ کہ نسلی امتیازکی بنیاد پر۔سیدنا بلالؓ اور ابولہب وابوجہل میں کتنا بڑا فرق ہے ؟۔ یہ بالکل مناسب نہیں کہ کارکن کی حیثیت سے PTM کی لیڈر شپ پرکوئی اپنا وہ ایجنڈا مسلط کرتاپھرے جس کی خود ہمت نہ رکھتا ہو؟۔منظورپشتین نے اچھا کیا کہ ’’افغانستان سے الحاق کا نعرہ مسترد کیااور کہا کہ ہمارا نعرہ صرف یہ ہے کہ ہمارے جوان قتل ہورہے ہیں اور گھربرباد ہورہے ہیں۔ باقی نعرے لوگ اپنی طرف سے لگا رہے ہیںPTMکا ان سے تعلق نہیں‘‘۔
منظور پشتین نے اصلیت ثابت کردی کہ بھارتی جنگ کی گیدڑ بھبکی کے پیشِ نظر پاکستان سے مکمل یکجہتی کا اظہار کردیاہے۔
12سال سے حلالہ کی لعنت کیخلاف 3 کتابیں، مضامین، ویڈیوزمیں قرآن کے دلائل دئیے کہ عدت میں و عدت کی تکمیل پرباہمی اصلاح سے رجوع ہے مگر اسکے باوجود یہ بے غیرت قوم کھڑی نہیں ہوتی ۔ پہاڑی ہونا قابلِ فخرتھا، حالانکہ کافی عرصہ سے میں وزیرستان نہ جاسکا۔ وزیرستان بچپن میں جاتا تو گرمی کے چند ماہ گزارتا۔ پہاڑی کو میدانی ،میدانی کو پہاڑی کہنا برا لگتا ہے۔ قرآن نے جہالت سے نکالا۔ قرآن کی گستاخی کرنیوالاشخص ہالینڈ میں مسلمان ہوگیا۔ ہم جہالت سے نکل گئے تو آرمی اورمُلا سیدھے ہوجائیں گے۔
بھارت متحدہ ہندوستان کا متمنی تھا لیکن مشرقی و مغربی پاکستان جدا ہوگئے ۔ وطن بھی ان کی گاؤ ماتا کی طرح ماں ہے۔ اب بنگلہ دیش پاکستان سے جدا ہے۔ پاکستان کی پاک سرزمین کو ہندو اگر گاؤ ماتا سمجھتے ہیں تو اس کے بچھڑے کشمیر سے بھی ان کو دستبردار ہونا ہوگا۔ کشمیر پر گرفت کے چکر میں بھارتی بنگال ، پنجاب کے سکھ وغیرہ کو بھی کھودیگا۔ پاگل کتے نے نہیں کاٹا ہے کہ وہ پاکستان پر حملے کی ہمت کرے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں